نقیب اللہ قتل کیس: دہشتگردی عدالت سے راؤ انوارکو بڑا سرپرائز مل گیا

کراچی(آن لائن) دہشت گردی کی عدالت نے نقیب اللہ قتل کیس کے اہم ملزم راؤ انوار کو جیل میں بی کلاس دینے کی درخواست منظور کرلی۔ ہفتہ کو کراچی کی دہشت گردی عدالت میں نقیب اللہ قتل کیس کی سماعت ہوئی اور پولیس نے ملزم را ؤ انور کو سخت سیکیورٹی میں عدالت میں پیش کیا جب کہ تفتیشی افسر ایس ایس پی سینٹرل ڈاکٹر رضوان بھی عدالت میں پیش ہوئے۔
سماعت کے دوران ملزم راؤ انوار کے وکیل کے دلائل کے بعد عدالت نے معطل ایس ایس پی کو جیل میں بی کلاس دینے کی درخواست منظور کرلی۔ واضہ ملزم کے گھر کو سب جیل قرار دینے سے متعلق درخواست پر عدالت نے کہاکہ یہ معاملہ فی الحال سندھ ہائیکورٹ میں ہے اس لیے عدالت کے فیصلے کا انتظار کیا جائے گا۔ عدالت نے کیس کی مزید سماعت 14 جون تک ملتوی کردی ہے۔
واضح رہے کہ ملزم راؤ انوار کے گھر کو سب جیل قرار دینے کے خلاف نقیب اللہ محسود کے والد خان محمد کی جانب سے درخواست کی گئی تھی کہ راؤ انوار قاتل ہے، اسے جیل منتقل کیا جائے، راو انوار کے گھر کو سب جیل قرار دینا قانونی عمل نہیں ہے.

Leave a comment

اپنا تبصرہ بھیجیں